Posts tagged ‘Ramzan’

Ramazan Ki Fazeelat

Advertisements

جولائی 29, 2011 at 11:20 تبصرہ کریں

آخری عشرے کی فضیلت و عظمت

اگست 31, 2010 at 05:10 تبصرہ کریں

لیلتہ القدر کی فضیلت

اگست 28, 2010 at 06:38 2 comments

رمضان المبارک کے تقاضے

رمضان المبارک قمری مہینوں میں نواں مہینہ ہے. اللہ تعالٰی نے اس ماہ مبارک کی اپنی طرف خاص نسبت فرمائی ہے. حدیث مبارک ہے کہ "رمضان شہر اللہ” رمضان اللہ تعالٰی کا مہینہ ہے جیسے مسجد و کعبہ کو اللہ عزوجل کا گھر کہتے ہیں کہ وہاں اللہ عزوجل ہی کے کام ہوتے ہیں. ایسے ہی رمضان اللہ عزوجل کا مہینہ ہے کہ اس مہینہ میں اللہ عزوجل ہی کے کام ہوتے ہیں. روزہ تراویح وغیرہ تو ہیں ہی اللہ عزوجل کے مگر بحالت روزہ جو جائز نوکری اور جائز تجارت وغیرہ کی جاتی ہے وہ بھی اللہ عزوجل کے کام قرار پاتے ہیں. اس لئے اس ماہ کا نام رمضان یعنی اللہ عزوجل کا مہینہ ہے. رمضان رمضاء سے مشتق ہے. رمضا موسم خریف کی بارش کو کہتے ہیں جس سے زمین دھل جاتی ہے اور ربیع کی فصل خوب ہوتی ہے. چونکہ یہ مہینہ بھی دل کے گردوغبار دھو دیتا ہے اور اس سے اعمال کی کھیتی ہری بھری رہتی ہے اس لئے اسے رمضان کہتے ہیں.

حضرت سیدنا انس رضی اللہ تعالٰی عنہ سے روایت نقل کی گئی ہے کہ نبی کریم رؤف رحیم صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا اس مہینے کا نام رمضان رکھا گیا ہے کیونکہ یہ گناہوں کو جلا دیتا ہے. اس مبارک مہینے سے رب ذوالجلال کا خصوصی تعلق ہے جس کی وجہ سے ہی یہ مبارک مہینہ دوسرے مہینوں سے ممتاز اور جدا ہے. اس ماہ سے اللہ تعالٰی کے خصوصی تعلق کا مطلب یہ ہے کہ اللہ تعالٰی کی تجلیات خاصہ اس مبارک مہینے میں موسلا دھار بارش کی طرح برستی رہتی ہیں.حضور صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد گرامی ہے کہ "روزہ دار کے منہ کی بو اللہ تعالٰی کے نزدیک مشک کی خوشبو سے زیادہ پسندیدہ ہے گویا روزہ دار اللہ کا محبوب ہو جاتا ہے اور اس کی خلوف (منہ کی بو) بھی اللہ تعالٰی کو پسند اور خوشگوار ہوتی ہے.

رمضان المبارک کی تمام فضیلتوں کو دیکھتے ہوئے مسلمانوں کو اس مہینہ میں عبادت کا خصوصی اہتمام کرنا چاہیے اور کوئی لمحہ بے کار اور ضائع نہیں جانے دینا چاہیے. ماہ رمضان کی ہر گھڑی رحمت بھری ہے اس مہینے میں اجر و ثواب بہت ہی بڑھ جاتا ہے. نفل کا ثواب فرض کے برابر اور فرض کا ثواب ستر گنا کر دیا جاتا ہے. بلکہ اس مہینے میں روزہ دار کا سونا بھی عبادت میں شمار کیا جاتا ہے. عرش اٹھانے والے فرشتے روزہ داروں کی دعا پر آمین کہتے ہیں اور  ایک روایت کے مطابق رمضان کے روزہ دار کے لئے دریا کی مچھلیاں افطار تک دعائے مغفرت کرتی رہتی ہیں.

روزہ کے آداب

مشائخ نے روزہ کے آداب میں چھ امور تحریر فرمائے ہیں کہ روزہ دار کو ان کا اہتمام ضروری ہے.

  1. اول نگاہ کسی بے محل جگہ پر نہ پڑے حتٰٰی کہ کہتے ہیں کہ بیوی پر بھی شہوت کی نگاہ نہ پڑے.
  2. دوسرے چیز زبان کی حفاظت ہے. جھوٹ، چغل خوری لغو بکواس، غیبت، بدگوئی، بدکلامی، جھگڑا وغیرہ سب چیزیں اس میں داخل ہیں.
  3. تیسری چیز جس کا روزہ دار کو اہتمام ضروری ہے وہ کان کی حفاظت ہے. ہر مکروہ چیز جس کا کہنا اور زبان سے نکالنا ناجائز ہے اس کی طرف کان لگانا اور سننا بھی ناجائز ہے. نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا کہ غیبت کا کرنے والا اور سننے والا دونوں گناہ میں شریک ہیں.
  4. چوتھی چیز باقی اعضاء بدن مثلاً ہاتھ کا ناجائز چیز پکڑنے سے، پاؤں کا ناجائز چیز کی طرف چلنے سے روکنا اور اسی طرح پیٹ کا افطار کے وقت مشتبہ چیز سے محفوظ رکھنا. جو شخص حرام مال سے افطار کرتا ہے اس کا حال اس شخص کا سا ہے کہ کسی مرض کے لئے دوا کرتا ہے مگر اس میں تھوڑا سا زہر بھی ملا لیتا ہے.
  5. پانچویں چیز افطار کے وقت حلال مال سے اتنا زیادہ نہ کھانا کہ شکم سیر ہو جائے اس لئے کہ روزہ کی غرض اس سے فوت ہو جاتی ہے.
  6. چھٹی چیز یہ کہ روزہ کے بعد اس سے ڈرتے رہنا بھی ضروری ہے کہ نامعلوم یہ روزہ قابل قبول ہے یا نہیں.

اگست 13, 2010 at 05:34 1 comment

ماہ رمضان کی فضیلت و اہمیت

حضرت سلیمان رضی اللہ تعالٰی عنہ فرماتے ہیں کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے شعبان کی آخری تاریخ میں ہم لوگوں کو وعظ فرمایا کہ تمہارے اوپر ایک مہینہ آرہا ہے جو بہت بڑا مہینہ ہے. اس میں ایک رات ہے، (شب قدر) جو ہزار مہینوں سے بڑھ کر ہے  اللہ تعالٰی نے اس کے روزہ کو فرض فرمایا اور اس کے رات کے قیام (یعنی تراویح) کو ثواب کی چیز بنایا ہے. جو شخص اس مہینہ میں نیکی کے ساتھ اللہ کا قرب حاصل کرے، ایسا ہے جیسا کہ غیر رمضان میں فرض کو ادا کیا اور جو شخص اس مہینہ میں کسی فرض کو ادا کرے وہ ایسا ہے جیسا کہ غیر رمضان میں ستر فرض ادا کئے. یہ مہینہ صبر کا ہے اور صبر کا بدلہ جنت ہے اور یہ مہینہ لوگوں کے ساتھ غم  خواری کرنے کا ہے. اس مہینہ میں مومن کا رزق بڑھا دیا جاتا ہے.

جو شخص کسی روزہ دار کا روزہ افطار کرائے، اس کے لئے گناہوں کے معاف ہونے اور آگ سے خلاصی کا سبب ہو گا، اور روزہ دار کے ثواب کی مانند اس کو ثواب ہو گا مگر اس روزہ دار کے ثواب میں سے کچھ کم نہیں کیا جائے گا. صحابہ   رضی اللہ تعالٰی عنہ نے عرض کیا کہ یارسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ہم میں سے ہر شخص تو اتنی وسعت نہیں رکھتا کہ روزہ دار لو افطار کرائے تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ (پیٹ بھر کھلانے پر موقوف نہیں) یہ ثواب تو اللہ جل شانہ، ایک کھجور سے کوئی افطار کرا دے یا ایک گھونٹ پانی پلا دے  یا ایک گھونٹ لسی پلا دے اس پر بھی مرحمت فرما دیتے ہیں. یہ ایسا مہینہ ہے کہ اس کا اوٓل حصٓہ اللہ کی رحمت ہے اور درمیانی حصٓہ مغفرت ہے اور آخری حصٓہ آگ سے آزادی پے جو شخص اس مہینہ میں ہلکا کردے اپنے غلام (خادم) کے بوجھ کو حق تعالٰی اس کی مغفرت فرماتے ہیں اور آگ سے آزادی فرماتے ہیں.

چار چیزوں کی اس میں کثرت رکھا کرو جن میں سے دو چیزیں اللہ کی رضا کے واسطے اور دو چیزیں ایسی ہیں کہ جن سے تمہیں چارہ کار نہیں. پہلی دو چیزیں جن سے تم اپنے رب کو راضی کرو وہ کلمہ طیبہ اور استغفار کی کثرت ہے اور دوسری دو چیزیں یہ ہیں کہ جنت کی طلب کرو اور آگ سے پناہ ماگو. جو شخص کسی روزہ دار کو پانی پلائے حق تعالٰی (قیامت کے دن) میرے حوض سے اس کو ایسا پانی پلائیں گے جس کے بعد جنت میں داخل ہونے تک پیاس نہیں لگے گی.

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ تعالٰی عنہ سے روایت ہے کے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا کہ:

"جب رمضان کی پہلی رات ہوتی ہے تو شیاطین اور سرکش جنات قید کر دئیے جاتے ہیں اور دوزخ کے سارے دروازے بند کر دئیے جاتے ہیں، پھر اس کا کوئی دروازہ کھلا نہیں رہتا اور جنت کے تمام دروازے کھول دئیے جاتے ہیں، پھر اس کا کوئی دروازہ بند نہیں رہتا اور اعلان کرنے والا (فرشتہ) یہ اعلان کرتا ہےکہ ، اے بھلائی یعنی (نیکی و ثواب) کے طلب گار! (اللہ تعا لٰی کی طرف) متوجہ ہو جا اور اے برائی کا ارادہ رکھنے والے! برائی سے باز آجا کیونکہ اللہ تعالٰی لوگوں کو آگ سے آزاد کرتا ہے (یعنی اللہ تعالٰی اس ماہ مبارک کے وسیلے میں بہت لوگوں کو آگ سے آزاد کرتا ہے، اس لئے ہو سکتا ہے کہ تو بھی ان لوگوں میں شامل ہو جائے) اور یہ اعلان رمضان کی ہر رات میں ہوتا ہے.”

(ترمذی و ابن ماجہ)

سونے کے دروازے والا محل

َسیدنا ابو سعید خُدری رضی اللہ تعالٰی عنہ سے روایت ہے، مکی مدنی سلطان، رحمت عالمیان صلی اللہ علیہ وسلم کا فرمانِ رحمتِ نشان ہے: "جب ماہِ رمضان کی پہلی رات آتی ہے تو آسمانوں اور جنت کے دروازے کھول دئیے جاتے ہیں اور آخر رات تک بند نہیں ہوتے جو کوئی بندہ اس ماہِ مبارک کی کسی بھی رات میں نماز پڑھتا ہے تو اللہ عزوجل اس کے ہر سجدہ کے عوض (یعنی بدلہ میں) اس کے لئے پندرہ سو نیکیاں لکھتا ہے اور اس کے لئے جنت میں سرخ یاقوت کا گھر بناتا ہے. جس میں ساٹھ ہزار دروازے ہوں گے. اور ہر دروازے کے پٹ سونے کے بنے ہوں گے جن میں یاقوتِ سرخ جڑے ہوں گے. پس جو کوئی ماہِ رمضان کا پہلا روزہ رکھتا ہے تو اللہ عزوجل مہینے کے آخر دن تک اس کے گناہ معاف کر دیتا ہے، اور اس کے لئے صبح سے شام تک ستر ہزار فرشتے دعائے مغفرت کرتے رہتے ہیں. رات اور دن میں جب بھی وہ سجدہ کرتا ہے اس کے ہر سجدہ کے عوض (یعنی بدلے) اُسے (جنت میں) ایک ایسا درخت عطا کیا جاتا ہے کہ اس کے سائے میں گھوڑے پر سوار پانچ سو برس تک چلتا رہے.”

(شُعَبُ الایمان، ج3، ص314، حدیث 3635)

بڑی بڑی آنکھ والی حوریں

حضرت سیدنا عبداللہ ابن عباس رضی اللہ تعالٰی عنہ سے مروی ہے کہ رحمتِ عالم، نُورِ مُجسم، حبیب اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کا فرمان معظم ہے: "جنت کو رمضان المبارک کے لئے خوشبوؤں کی دھونی دی جاتی ہے اور شروع سال سے آخر تک اسے آراستہ کیا جاتا ہے. جب رمضان شریف کی پہلی تاریخ آتی ہے تو عرشِ عظیم کے نیچے سے مَثِیرہ (مَ . ثِی . رَہ) نامی ہوا چلتی ہے جو جنت کے درختوں کے پتوں کو ہلاتی ہے. اس ہوا کے چلنے سے ایسی دلکش آواز بلند ہوتی ہے کہ اس سے بہتر آواز آج تک کسی نے نہیں سنی. اس آواز کو سن کر بڑی بڑی آنکھوں والی حوریں ظاہر ہوتی ہیں یہاں تک کہ جنت کے بلند محلوں پر کھڑی ہو جاتی ہیں اور کہتی ہیں: "ہے کوئی جو ہم کو اللہ تعالٰی سے مانگ لے کہ ہمارا نکاح اس سے ہو؟” پھر وہ حوریں داروغہء جنت (حضرت) رضوان (علیہ االصلٰوۃ والسلام) سے پوچھتی ہیں: "آج یہ کیسی رات ہے؟” (حضرت) رضوان (علیہ االصلٰوۃ والسلام) جواباً تَلبِیہ (یعنی لبیک) کہتے ہیں ، پھر کہتے ہیں: "یہ ماہ رمضان کی پہلی رات ہے، جنت کے دروازے اُمتِ محمدیہ صلی اللہ علیہ وسلم کے روزےداروں کے لئے کھول دیئے گئے ہیں.”

(الترغیب و الترہیب، ج2، ص60، حدیث 23)

روزے کا اجر بے حساب ہے

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ تعالٰی عنہ روایت کرتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلمنے فرمایا : "اللہ عزوجل فرماتے ہیں کہ ابن آدم کا ہر عمل اس کے لئے ہے سوائے روزے کے، روزہ میرے لئے ہے اور میں ہی اس کی جزا دوں گا، اور روزہ (آگ سے) ڈھال ہے ، لہٰذا جس روز تم میں سے کسی کا روزہ ہو اس روز وہ فحش گوئی نہ کرے اور بے ہودہ کلامی نہ کرے اور اگر کوئی دوسرااس سے گالی گلوچ کرے یا لڑائی کرے تو روزہ دار کو (صرف اتنا کہنا چاہئے کہ) میں روزہ دار ہوں ، اس ذات کی قسم جس کے ہاتھ میں محمد  صلی اللہ علیہ وسلم کی جان ہے روزہ دار کے منہ کی خوشبو قیامت کے دن اللہ تعالٰی کو مشک کی خوشبو سے بھی زیادہ پسند ہوگی. روزہ دار کے لئے دو خوشیاں ہیں جن سے وہ فرحت حاصل کرے گا، اولاً جب روزہ افطار کرتا ہے تو خوش ہوتا ہے، ثانیاً جب وہ اپنے رب سے ملے گا اور روزے کے بدلے میں اپنے رب سے انعام پائے گا تو خوش ہوگا.”  (صحیح مسلم)

رمضان المبارک میں جبرائیل علیہ السلام کو حکم ہوتا ہے کہ سرکش شیاطین کو قید کرکے گلے میں طوق ڈال کر دریا میں پھینک دو تاکہ اُمت محمدی صلی اللہ علیہ وسلم کے روزوں کو خراب نہ کریں. حضور اکرم  صلی اللہ علیہ وسلم نے یہ بھی فرمایا کہ اللہ تعاٰلٰی ایک منادی کرنے والے کو حکم دیتے ہیں کہ تین مرتبہ یہ آواز دے.

  • ہے کوئی مانگنے والا جس کو میں عطا کروں.
  • ہے کوئی توبہ کرنے والا جس کی میں توبہ قبول کروں.
  • ہے کوئی مغفرت چاہنے والا کہ میں اس کی مغفرت کروں.

حضور اکرم  صلی اللہ علیہ وسلم رمضان کی اہمیت واضح کرتے ہوئے فرماتے ہیں کہ اگر بندوں کو معلوم ہوتا کہ رمضان کیا ہے  تو میری اُمت تمنا کرتی کہ کاش پورا سال رمضان ہی ہو.

اگست 11, 2010 at 05:56 تبصرہ کریں


A Place For Indian And Pakistani Chatters

Todd Space Social network

زمرے

RSS Urdu Sad Poetry

  • GHAZAL BY SAGHAR SIDDIQUI مارچ 1, 2015
    Filed under: Ghazal, Nazam, Saghir Siddiqui, Urdu Poetry Tagged: FAREB, Ghazal, Ghazal by Saghir Siddiqui, NASHEMAN, Pakistani Poetry Writer, QAYAMAT, Sad Urdu Poetry, SAGHAR, Saghir Siddiqui, SHAGOOFAY, SHETAN, TERI DUNIYA MAI YA RAB, Urdu, Urdu Adab, Urdu Poetry, Urdu shayri, ZEEST
  • چلو اک بار پھر سے اجنبی بن جائیں ہم دونوں فروری 28, 2015
    چلو اک بار پھر سے اجنبی بن جائیں ہم دونوں نہ میں تم سے کوئی امید رکھوں دل نوازی کی نہ تم میری طرف دیکھو غلط انداز نظروں سے تمہیں بھی کوئی الجھن روکتی ھے پیش قدمی سے مجھے بھی لوگ کہتے ہیں کے یہ جلوئے پرائے ہیں میرے ہمراہ اب ہیں رسوائیاں میرے ماضی […] […]
  • Dil main Thkana اکتوبر 6, 2012
    درد کا دل میں ٹھکا نہ ہو گیا زندگی بھر کا تماشا ہو گیا مبتلائے ھم بھی ہو گئے ان کا ہنس دینا بہانا ہو گیا بے خبر گلشن تھا میرے عشق سے غنچے چٹکے راز افشا ہو گیا ماہ و انجم پر نظر پڑنے لگی ان کو دیکھے اک زمانہ ہو گیا تھے نیاز […] […]
  • Ghazal-Sad Poetry ستمبر 9, 2012
    Ghazal-Sad PoetryFiled under: Bazm-e-Adab, Ghazal, Meri Pasand, My Collection, Pakistani writers, Picture Poetry, Poetry, Poetry Collection, ROMANTIC POETRY, Sad Poetry, Uncategorized, Urdu, Urdu Khazana, Urdu Magazine, Urdu Poetry, Urdu Point, Urdu Station, Urdu Time, Urdu translation Tagged: ahmed faraz, Bazm-e-Adab, Female Writer, Ikhlaki Kahanian, Imran […]
  • Ik tere rooth janne say اگست 28, 2012
    تیرے روٹھ جانے سے کوئی فرق نہیں پڑے گا پھول بھی کھلیں گے تارے بھی چمکیں گے مینا بھی برسے گی ھاں مگر کسی کو مسکرانہ بھول جائے گا "اک تیرے روٹھ جانے سے” Filed under: Nazam, Urdu Poetry Tagged: Faraq, ik teray, Indian, Muhabbat, Muskurana, Nahi, Nazam, nazm, Pakistani, Poem, Poetry, Romantic Urdu Poetry, […] […]
  • yadoon ka jhoonka اگست 13, 2012
    یادوں کا اک جھونکا آیا ھم سے ملنے برسوں بعد پہلے اتنا رٰوئے نہیں تھے جتنا روٰئے برسوں بعد لمحہ لمحہ گھر اجڑا ھے، مشکل سے احساس ہوا پتھر آئے برسوں پہلے ، شیشے ٹوٹے برسوں بعد آج ہماری خاک پہ دنیا رونے دھونے بیٹھی ھے پھول ہوئے ہیں اتنے سستے جانے کتنے برسوں بعد […] […]
  • Log Mosam Ki tarah Kaisay Badal Jaty Hain-Urdu Gazhal جولائی 29, 2012
    Log Mosam Ki tarah Kaisay Badal Jaty Hain-Urdu Gazhal Filed under: Bazm-e-Adab, Dil Hai Betaab, Meri Pasand, My Collection, Nazam, Pakistani writers, Picture Poetry, Poetry Collection, Sad Poetry, Urdu Khazana, Urdu Magazine, Urdu Poetry, Urdu Point, Urdu Station, Urdu Time, Urdu translation Tagged: Bazm-e-Adab, Best Urdu Poetry, Dil Hai Betaab, Marsia Sad P […]
  • Mera Qalam Meri Soch Tujh Se Waabasta – Romantic Urdu Poetry جولائی 21, 2012
    MERA QALAM MERI SOCH TUJH SE WAABASTA – ROMANTIC URDU POETRY Mera qalam meri soch tujh se waabasta Meri to zeest ka her rang tujh se waabasta Lab pe jo phool they khushiyon k sab tere hi they Aaj is aankh k aansu b tujh se waabasta Hum kisi b rah pe chalen paas tere […]
  • Kabhi Khawabon Main Milain-Pakistani writers جولائی 12, 2012
    Kabhi Khawabon Main Milain-Pakistani writers Filed under: Pakistani writers Tagged: ahmed faraz, BEST URDU NOVELS, Female Writer, Ikhlaki Kahanian, Imran Series, Islamic Books, Islamic Duayen, Jasoosi Duniya, JASOOSI KAHANIAN, Jasoosi Novels, Mazhar Kaleem, Meri Pasand, My Collection, Night Fighter, Pakistani Writers, PARVEEN SHAKIR, Poetry Collection, roman […]
  • Ghazal-Sad Poetry جولائی 4, 2012
    Ghazal-Sad PoetryFiled under: Bazm-e-Adab, Meri Pasand, My Collection, Pakistani writers, Picture Poetry, Poetry, Poetry Collection, Poetry Urdu Magazine, ROMANTIC POETRY, Sad Poetry, Uncategorized, Urdu, Urdu Khazana, Urdu Magazine, Urdu Poetry, Urdu Point, Urdu Station, Urdu Time, Urdu translation Tagged: ahmed faraz, Bazm-e-Adab, Female Writer, Ikhlaki Ka […]