نماز کے طبّی فوائد

مئی 31, 2011 at 06:18 تبصرہ کیجیے

نماز اسلام کا بنیادی ستون ہے اور فرائض میں شامل ہے. نماز محض ایک فرض ہی نہیں ہے بلکہ اس کے طبّی فوائد بھی ہیں. نماز اور ارکان نماز کی سائنسی توجیہہ حسبِ ذیل ہیں جو توجہ طلب ہیں:
نماز میں دونوں ہاتھوں کا کانوں تک اُٹھانا یوں اہم ہے کہ اس عمل سے بازوؤں، گردن اور شانوں کے پٹھوں کی ورزش ہوتی ہے. جدید تحقیق کے مطابق دل کے مریضوں کے لئے یہ ورزش بے حد مفید ثابت ہوتی ہے جو نماز پڑھنے سے خودبخود ہو جاتی ہے. اور یہ یا اس طرح کی ورزش عام حالات میں فالج کے خطرے سے بھی محفوظ رکھتی ہے. نماز میں قیام کرنے سے دل کا بوجھ ہلکا ہو جاتا ہے، کیونکہ انسان کے جسم کا وزن دونوں پاؤں پر یکساں پڑتا ہے. آنکھیں سجدے کی جگہ پر لگی رہنے سے دل بھی یکسو ہوتا ہے اور خون کی روانی میں آسانی پیدا ہو جاتی ہے.
رکوع کرنے سے بالائی نصف جسم میں جھکنے کی وجہ سے زیادہ خون پمپ ہوتا ہے. پنڈلیوں، ریڑھ کی ہڈی، ناف اور گردن کو ان کے عضلاتی اور اعصابی تناؤ سے قوت حاصل ہوتی ہے اور اندرونی پیٹ کے عضلات پر دباؤ سے پیٹ کے مشتمولات جگر، آنتوں، گردوں اور مثانے کی مالش ہوتی ہے، جس سے ان اعضاء کو فرحت ملتی ہے.
رکوع کے عمل سے معدے اور آنتوں کی خرابیاں دور ہو جاتی ہیں، نیز پیٹ کے عضلات کا ڈھیلا پن ختم ہو جاتا ہے. رکوع کی وضع سے بالائی جسم کے نصف اعضاء کے دوران خون اور ان کے اعصاب پر اثر پڑتا ہے.
اس طرح سائنس کی زبان میں نماز پڑھنے والے کے حیاتیاتی نظام سے حواس کے تمام فطری وظائف کا متبر ہے، جسم اور ذہن کی صحیح راہ نمائی ہوتی رہتی ہے، رکوع سے حرام مغز کی کارکردگی میں اضافہ ہوتا ہے. جن لوگوں کے اعضاء سُن ہو جاتے ہیں وہ اس شکایت سے بہت جلد نجات حاصل کر سکتے ہیں. رکوع سےکمر درد کے مریض اور جن کے حرام مغز میں ورم آ گیا ہو، جلد صحت یاب ہو جاتے ہیں. یہی نہیں بلکہ رکوع سے گردوں میں پتھری بننے کا عمل بھی سست پڑ جاتا ہے. پتھری رکوع کی وجہ سے جلد نکل بھی جاتی ہے. رکوع سے ٹانگوں کی بیماریوں میں مبتلا اور فالج زدہ مریض چلنے پھرنے کے قابل ہو جاتے ہیں. رکوع میں آنکھوں کی طرف دوران خون کے بہاؤ کی وجہ سے دماغ و نگاہ کی کارکردگی میں اضافہ ہو جاتا ہے.
رکوع کی حالت میں نمازی جب اپنے ہاتھوں کی انگلیوں سے اپنے گھٹنوں کو پکڑتا ہے تو اس کی ہتھیلیوں اور انگلیوں میں گردش کرنے والی بجلی گھٹنوں میں جزب ہو جاتی ہے جس کی وجہ سے گھٹنوں میں صحت مند لعاب برقرار رہتا ہے. اور ایسے لوگ گھٹنوں اور جوڑوں کے درد سے محفوظ رہتے ہیں. رکوع کرنے سے اور دوبارہ سیدھے کھڑے ہونے سے چہرے اور سر کا دورانِ خون نارمل ہو جاتا ہے جس سے شریانوں میں لچک کی استعداد بڑھنے سے ہائی بلڈ پریشر اور فالج کے امکانات کم ہو جاتے ہیں. رکوع کے بے شمار فوائد ہیں.
نماز میں سجدے کا دورانیہ صرف چند سیکنڈ کا ہوتا ہے لیکن جب نمازی سجدہ کرتا ہے تو اس کے دماغ کی شریانوں کی طرف خون کا بہاؤ زیادہ ہو جاتا ہے. صرف سجدے کی حالت میں دماغ، اعصاب، آنکھوں اور سر کے دیگر حصوں کی طرف خون کی ترسیل متوازن ہو جاتی ہے جس کی وجہ سے دماغ اور نگاہ کی کارکردگی بہت تیز ہو جاتی ہے. سجدے کے دوران خون اور زمین کی کشش کا اضافی دباؤ ہاتھوں، پیشانی، چہرے اور سینے اور دل کی طرف بڑھ جاتا ہے اور پھر چند سیکنڈ بعد سجدے سے سر اُٹھاتے ہی نارمل ہو جاتا ہے. اسی طرح خون کی نالیوں کی مقررہ حرکات اور طاقتور پمپنگ سے رکوع کی قوت لچک بڑھ جاتی ہے. خون کی بال جیسی باریک رگوں میں خون کے بہاؤ کی وہ سست رفتاری جو آرام طلب زندگی سے یا رکوع کی سختی سے پیدا ہو جاتی ہے، سجدے کے باعث دور ہو جاتی ہے. جدید ترین تحقیق کے مطابق اگر پیشانی کی درمیانی کو دو سے تین منٹ کے لئے دبایا جائے تو اس سے ذہنی انتشار میں کمی واقع ہوتی ہے. سجدے کے دوران عین اسی مقام کو زمین کے ساتھ مس کیا جاتا ہے. سجدے میں ٹانگوں اور رانوں کے پچھلے عضلات، کمر اور پیٹ کے عضلات کھنچے ہوئے ہوتے ہیں. یہ ایک ایسی بہترین ورزش ہے جو ریڑھ کی ہڈی کو مضبوط اور لچک دار بناتی ہے. اندرونی اعصاب کو تقویت بخشتی ہے. پوری نماز ایسے ہی طبّی فوائد کا مجموعہ ہے.

Entry filed under: Islam : اسلام. Tags: , , .

بائیں ہاتھ سے پانی پینا بندوں کے حقوق

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

Trackback this post  |  Subscribe to the comments via RSS Feed


A Place For Indian And Pakistani Chatters

Todd Space Social network

زمرے

RSS Urdu Sad Poetry

  • GHAZAL BY SAGHAR SIDDIQUI مارچ 1, 2015
    Filed under: Ghazal, Nazam, Saghir Siddiqui, Urdu Poetry Tagged: FAREB, Ghazal, Ghazal by Saghir Siddiqui, NASHEMAN, Pakistani Poetry Writer, QAYAMAT, Sad Urdu Poetry, SAGHAR, Saghir Siddiqui, SHAGOOFAY, SHETAN, TERI DUNIYA MAI YA RAB, Urdu, Urdu Adab, Urdu Poetry, Urdu shayri, ZEEST
  • چلو اک بار پھر سے اجنبی بن جائیں ہم دونوں فروری 28, 2015
    چلو اک بار پھر سے اجنبی بن جائیں ہم دونوں نہ میں تم سے کوئی امید رکھوں دل نوازی کی نہ تم میری طرف دیکھو غلط انداز نظروں سے تمہیں بھی کوئی الجھن روکتی ھے پیش قدمی سے مجھے بھی لوگ کہتے ہیں کے یہ جلوئے پرائے ہیں میرے ہمراہ اب ہیں رسوائیاں میرے ماضی […] […]
  • Dil main Thkana اکتوبر 6, 2012
    درد کا دل میں ٹھکا نہ ہو گیا زندگی بھر کا تماشا ہو گیا مبتلائے ھم بھی ہو گئے ان کا ہنس دینا بہانا ہو گیا بے خبر گلشن تھا میرے عشق سے غنچے چٹکے راز افشا ہو گیا ماہ و انجم پر نظر پڑنے لگی ان کو دیکھے اک زمانہ ہو گیا تھے نیاز […] […]
  • Ghazal-Sad Poetry ستمبر 9, 2012
    Ghazal-Sad PoetryFiled under: Bazm-e-Adab, Ghazal, Meri Pasand, My Collection, Pakistani writers, Picture Poetry, Poetry, Poetry Collection, ROMANTIC POETRY, Sad Poetry, Uncategorized, Urdu, Urdu Khazana, Urdu Magazine, Urdu Poetry, Urdu Point, Urdu Station, Urdu Time, Urdu translation Tagged: ahmed faraz, Bazm-e-Adab, Female Writer, Ikhlaki Kahanian, Imran […]
  • Ik tere rooth janne say اگست 28, 2012
    تیرے روٹھ جانے سے کوئی فرق نہیں پڑے گا پھول بھی کھلیں گے تارے بھی چمکیں گے مینا بھی برسے گی ھاں مگر کسی کو مسکرانہ بھول جائے گا “اک تیرے روٹھ جانے سے” Filed under: Nazam, Urdu Poetry Tagged: Faraq, ik teray, Indian, Muhabbat, Muskurana, Nahi, Nazam, nazm, Pakistani, Poem, Poetry, Romantic Urdu Poetry, […] […]
  • yadoon ka jhoonka اگست 13, 2012
    یادوں کا اک جھونکا آیا ھم سے ملنے برسوں بعد پہلے اتنا رٰوئے نہیں تھے جتنا روٰئے برسوں بعد لمحہ لمحہ گھر اجڑا ھے، مشکل سے احساس ہوا پتھر آئے برسوں پہلے ، شیشے ٹوٹے برسوں بعد آج ہماری خاک پہ دنیا رونے دھونے بیٹھی ھے پھول ہوئے ہیں اتنے سستے جانے کتنے برسوں بعد […] […]
  • Log Mosam Ki tarah Kaisay Badal Jaty Hain-Urdu Gazhal جولائی 29, 2012
    Log Mosam Ki tarah Kaisay Badal Jaty Hain-Urdu Gazhal Filed under: Bazm-e-Adab, Dil Hai Betaab, Meri Pasand, My Collection, Nazam, Pakistani writers, Picture Poetry, Poetry Collection, Sad Poetry, Urdu Khazana, Urdu Magazine, Urdu Poetry, Urdu Point, Urdu Station, Urdu Time, Urdu translation Tagged: Bazm-e-Adab, Best Urdu Poetry, Dil Hai Betaab, Marsia Sad P […]
  • Mera Qalam Meri Soch Tujh Se Waabasta – Romantic Urdu Poetry جولائی 21, 2012
    MERA QALAM MERI SOCH TUJH SE WAABASTA – ROMANTIC URDU POETRY Mera qalam meri soch tujh se waabasta Meri to zeest ka her rang tujh se waabasta Lab pe jo phool they khushiyon k sab tere hi they Aaj is aankh k aansu b tujh se waabasta Hum kisi b rah pe chalen paas tere […]
  • Kabhi Khawabon Main Milain-Pakistani writers جولائی 12, 2012
    Kabhi Khawabon Main Milain-Pakistani writers Filed under: Pakistani writers Tagged: ahmed faraz, BEST URDU NOVELS, Female Writer, Ikhlaki Kahanian, Imran Series, Islamic Books, Islamic Duayen, Jasoosi Duniya, JASOOSI KAHANIAN, Jasoosi Novels, Mazhar Kaleem, Meri Pasand, My Collection, Night Fighter, Pakistani Writers, PARVEEN SHAKIR, Poetry Collection, roman […]
  • Ghazal-Sad Poetry جولائی 4, 2012
    Ghazal-Sad PoetryFiled under: Bazm-e-Adab, Meri Pasand, My Collection, Pakistani writers, Picture Poetry, Poetry, Poetry Collection, Poetry Urdu Magazine, ROMANTIC POETRY, Sad Poetry, Uncategorized, Urdu, Urdu Khazana, Urdu Magazine, Urdu Poetry, Urdu Point, Urdu Station, Urdu Time, Urdu translation Tagged: ahmed faraz, Bazm-e-Adab, Female Writer, Ikhlaki Ka […]

%d bloggers like this: