ایک نمازی کی آپ بیتی

جنوری 13, 2011 at 10:03 1 comment

جانے کیا وجہ ہے کہ مسجد جانے سے ہمیشہ میری جان جاتی ہے اور بچپن میں تو جمعے کا خطبہ سن کر باقاعدہ چھریاں نظر آنا شروع ہو جاتی تھیں۔ اذان کی آواز سنتے ہی جوتیاں کبھی صوفوں، کبھی پیٹی، کبھی ڈولی کے نیچے اور کبھی گیراج میں پڑے کباڑ میں چھپانے کو دوڑتا تھا۔ چونکہ امی ہمیں ہر صورت مسجد بھیجنے پر مصر رہتی تھیں اس لئے سدباب کے طور پر ہم نے بہن بھائیوں کی جوتیوں کی بھی شامت لانی شروع کر دی اور جب اس کاروائی کی زد میں امی کی جوتیاں بھی آنے لگیں تو چمٹے سے ہونے والی ٹھکائی اور ننگے پیر مسجد جانے کی سزا کی بدولت یہ عادت چھوٹ گئی۔
بچپن تو یہ بات سمجھ میں آئے بغیر گزر گیا کہ مسجد جانے سے کیا مسئلہ ہے لیکن اب بھی مسجد نا جانے کا بہانہ ڈھونڈتا ہوں۔ کیوں؟ اس کے لئے آپ کو ایک نمازی کی آپ بیتی پڑھنا ہوگی۔ تفصیل سے غیبت کی میری بے شک عادت ہے لیکن آپ بیتی مختصراً کہنے کا عادی ہوں اور یہ دونوں کا ملغوبہ ہے۔ تو کہانی شروع ہوتی ہے یہاں سے
نماز کے لئے تکبیر کہی گئی مولوی صاحب نے کہا صفیں سیدھی کر لیں (دائیں بائیں نمازی میرے پاؤں پر کھڑے ہو گئے)۔ اگر مولوی صاحب نے کہا کاندھے سے کاندھا ملا لیں (نمازیوں نے اپنے ہی پیر ملا لئے اور مجھ سے کاندھے جوڑ لئے)۔ اب قیام میں حالت کچھ ایسی ہے کہ یا تو لوگ میرے پیروں پر کھڑے ہوتے ہیں یا میں ان کے کندھوں سے لٹکا ہوتا ہوں۔
قعدے اور تشہد کی روداد یہ ہے کہ بیٹھتے ہی ٹانگیں کاک ٹیل گلاس یا غلیل کی طرح کھول لیتے ہیں۔ کچھ لوگوں کی تشریف اتنی نازک اور فریجائل ہوتی ہے کہ احتیاطاً اس پر بیٹھنا نامناسب سمجھتے ہیں اور مجھ پر ایسے گرنے لگتے ہیں جیسے شاہراہ ریشم پر ہونے والی لینڈ سلائیڈنگ۔ نتیجہ یہ کہ میں دو تووں کے بیچ میں آیا ٹام بن جاتا ہوں.
آگے والا نماز سے پہلے فارغ ہو جائے تو اپنی قمیض کو پیچھے سے 14 اگست کا جھنڈا بنا کر لہراتا ہے اور میری سجدے کی جگہ پر کھسک آتا ہے، اور قسم لے لو کتنی دفعہ تو ایسا ہوا ہے کہ میرے سجدہ زدہ سر پر ہی براجمان ہو گیا۔ نمازیوں کو لمبی قمیضیں پہننے کا شوق تو بہت ہوتا ہے لیکن جب وہ ”ہوا میں اڑتا جائے میرا لال دوپٹہ ململ کا“ کی عملی تصویر بنی ہوتی ہیں تو سنبھالنے کی ان کو توفیق نہیں ہوتی۔ ہونی بھی نہیں چاہئے (ہلن جلن سے نماز خراب ہوتی ہے)۔
فرض نماز کے فوراً بعد ایک دین دار بندہ اٹھ کر ”میری آپکی ساری دنیا کی بھلائی اللہ تعالٰی نے دین میں رکھی ہے ۔۔۔“ کی کیسٹ چلاتا ہے۔ اللہ کی لگن اور لوگوں کو راہ راست پر لانے کی دھن میں یہ بندہ اتنا مگن ہوتا ہے کہ نماز کے بعد اکٹھے ہوئے بے راہ لوگوں کی جماعت کو تبلیغ کے لئے یہ بندہ میرے سامنے سے اور مجھے دھکے دے کر گزر جاتا ہے اور عین نمازیوں کے بیچ بے راہ لوگوں کو بٹھا کر عمدہ اور چنگھاڑتی تقریر شروع کر دیتا ہے۔
لیکن میں اسے کچھ نہیں کہہ سکتا کیونکہ میری داڑھی نہیں ہے، میں شلوار آدھی پنڈلیوں تک اونچی نہیں باندھتا، سیدھے گھیر والا کرتا نہیں پہنتا، نا میرے سر پر امامہ بندھا ہے ، نا میں نماز کے دوران بار بار ”اعضائے پوشیدہ“ کی خبر گیری کرتا ہوں اور اکثر پینٹ جیسے حرام لباس میں نماز پڑھتا ہوں ۔
میں نے کئی بار چاہا کہ ان اصحاب کو کچھ کہوں لیکن چونکہ میں مسجد کامستقل نمازی نہیں اور نا ہی مسجد کمیٹی کو باقاعدہ ایک لگی بندھی رقم ہدیہ و چندہ کرتا ہوں۔ اس لئے مجھے مسجد کا چوہدری بننے کا کوئی حق ہے نا ہی اسلام کا ٹھیکیدار بننے کا۔

Entry filed under: Aap Beeti : آپ بیتی, Urdu Adab : اردو ادب. Tags: , , , , , , .

حضرت خواجہ حسن بصری رحمتہ اللہ علیہ اردو مزاحیات

1 تبصرہ Add your own

  • 1. عمران اقبال  |  جنوری 16, 2011 کو 16:11

    واہ بھائی واہ۔۔۔ کیا بات کہہ دی۔۔۔۔ بلکل ایسی ہی ہوتا ہے۔۔۔

    جواب دیں

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

Trackback this post  |  Subscribe to the comments via RSS Feed


A Place For Indian And Pakistani Chatters

Todd Space Social network

زمرے

RSS Urdu Sad Poetry

  • GHAZAL BY SAGHAR SIDDIQUI مارچ 1, 2015
    Filed under: Ghazal, Nazam, Saghir Siddiqui, Urdu Poetry Tagged: FAREB, Ghazal, Ghazal by Saghir Siddiqui, NASHEMAN, Pakistani Poetry Writer, QAYAMAT, Sad Urdu Poetry, SAGHAR, Saghir Siddiqui, SHAGOOFAY, SHETAN, TERI DUNIYA MAI YA RAB, Urdu, Urdu Adab, Urdu Poetry, Urdu shayri, ZEEST
  • چلو اک بار پھر سے اجنبی بن جائیں ہم دونوں فروری 28, 2015
    چلو اک بار پھر سے اجنبی بن جائیں ہم دونوں نہ میں تم سے کوئی امید رکھوں دل نوازی کی نہ تم میری طرف دیکھو غلط انداز نظروں سے تمہیں بھی کوئی الجھن روکتی ھے پیش قدمی سے مجھے بھی لوگ کہتے ہیں کے یہ جلوئے پرائے ہیں میرے ہمراہ اب ہیں رسوائیاں میرے ماضی […] […]
  • Dil main Thkana اکتوبر 6, 2012
    درد کا دل میں ٹھکا نہ ہو گیا زندگی بھر کا تماشا ہو گیا مبتلائے ھم بھی ہو گئے ان کا ہنس دینا بہانا ہو گیا بے خبر گلشن تھا میرے عشق سے غنچے چٹکے راز افشا ہو گیا ماہ و انجم پر نظر پڑنے لگی ان کو دیکھے اک زمانہ ہو گیا تھے نیاز […] […]
  • Ghazal-Sad Poetry ستمبر 9, 2012
    Ghazal-Sad PoetryFiled under: Bazm-e-Adab, Ghazal, Meri Pasand, My Collection, Pakistani writers, Picture Poetry, Poetry, Poetry Collection, ROMANTIC POETRY, Sad Poetry, Uncategorized, Urdu, Urdu Khazana, Urdu Magazine, Urdu Poetry, Urdu Point, Urdu Station, Urdu Time, Urdu translation Tagged: ahmed faraz, Bazm-e-Adab, Female Writer, Ikhlaki Kahanian, Imran […]
  • Ik tere rooth janne say اگست 28, 2012
    تیرے روٹھ جانے سے کوئی فرق نہیں پڑے گا پھول بھی کھلیں گے تارے بھی چمکیں گے مینا بھی برسے گی ھاں مگر کسی کو مسکرانہ بھول جائے گا “اک تیرے روٹھ جانے سے” Filed under: Nazam, Urdu Poetry Tagged: Faraq, ik teray, Indian, Muhabbat, Muskurana, Nahi, Nazam, nazm, Pakistani, Poem, Poetry, Romantic Urdu Poetry, […] […]
  • yadoon ka jhoonka اگست 13, 2012
    یادوں کا اک جھونکا آیا ھم سے ملنے برسوں بعد پہلے اتنا رٰوئے نہیں تھے جتنا روٰئے برسوں بعد لمحہ لمحہ گھر اجڑا ھے، مشکل سے احساس ہوا پتھر آئے برسوں پہلے ، شیشے ٹوٹے برسوں بعد آج ہماری خاک پہ دنیا رونے دھونے بیٹھی ھے پھول ہوئے ہیں اتنے سستے جانے کتنے برسوں بعد […] […]
  • Log Mosam Ki tarah Kaisay Badal Jaty Hain-Urdu Gazhal جولائی 29, 2012
    Log Mosam Ki tarah Kaisay Badal Jaty Hain-Urdu Gazhal Filed under: Bazm-e-Adab, Dil Hai Betaab, Meri Pasand, My Collection, Nazam, Pakistani writers, Picture Poetry, Poetry Collection, Sad Poetry, Urdu Khazana, Urdu Magazine, Urdu Poetry, Urdu Point, Urdu Station, Urdu Time, Urdu translation Tagged: Bazm-e-Adab, Best Urdu Poetry, Dil Hai Betaab, Marsia Sad P […]
  • Mera Qalam Meri Soch Tujh Se Waabasta – Romantic Urdu Poetry جولائی 21, 2012
    MERA QALAM MERI SOCH TUJH SE WAABASTA – ROMANTIC URDU POETRY Mera qalam meri soch tujh se waabasta Meri to zeest ka her rang tujh se waabasta Lab pe jo phool they khushiyon k sab tere hi they Aaj is aankh k aansu b tujh se waabasta Hum kisi b rah pe chalen paas tere […]
  • Kabhi Khawabon Main Milain-Pakistani writers جولائی 12, 2012
    Kabhi Khawabon Main Milain-Pakistani writers Filed under: Pakistani writers Tagged: ahmed faraz, BEST URDU NOVELS, Female Writer, Ikhlaki Kahanian, Imran Series, Islamic Books, Islamic Duayen, Jasoosi Duniya, JASOOSI KAHANIAN, Jasoosi Novels, Mazhar Kaleem, Meri Pasand, My Collection, Night Fighter, Pakistani Writers, PARVEEN SHAKIR, Poetry Collection, roman […]
  • Ghazal-Sad Poetry جولائی 4, 2012
    Ghazal-Sad PoetryFiled under: Bazm-e-Adab, Meri Pasand, My Collection, Pakistani writers, Picture Poetry, Poetry, Poetry Collection, Poetry Urdu Magazine, ROMANTIC POETRY, Sad Poetry, Uncategorized, Urdu, Urdu Khazana, Urdu Magazine, Urdu Poetry, Urdu Point, Urdu Station, Urdu Time, Urdu translation Tagged: ahmed faraz, Bazm-e-Adab, Female Writer, Ikhlaki Ka […]

%d bloggers like this: